خبریں

تازہ ترین

انتخابی حلقہ جی بی 2 میں پیپلزپارٹی نے تحریک انصاف کو شکست دے دی … پی پی امیدوار جمیل احمد 8817 ووٹ لے کر جیت گئے، ان کے مدمقابل پی ٹی آئی کے امیدوار فتح اللہ خان کو شکست … مزید

گلگت (اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 15 نومبر2020ء) گلگت بلتستان کی قانون ساز اسمبلی کیلئے الیکشن لڑنے والے انتخابی امیدواروں کے نتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے، انتخابی حلقہ جی بی 2 میں پیپلزپارٹی کے امیدوار جمیل احمد 8817 ووٹ لے کر جیت گئے، ان کے مدمقابل پی ٹی آئی کے امیدوار فتح اللہ خان کو شکست ہوگئی ہے۔ غیرحتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق گلگت بلتستان کے عام انتخابات کے حلقہ جی بی 2 کے تمام پولنگ اسٹیشنز کے غیرحتمی نتائج آگئے۔ جس کے تحت پیپلزپارٹی کے امیدوار جمیل احمد 8817 ووٹ لے کر جیت گئے ہیں۔ ان کے مدمقابل  پی ٹی آئی کے امیدوار فتح اللہ خان کو شکست ہوگئی ہے۔ فتح اللہ نے 6607 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے ہیں۔ دوسری جانب چیف الیکشن کمشنر راجہ شہبازخان کا کہنا ہے کہ گلگت بلتستان کا الیکن آزاد ،صاف اور شفاف تھا۔

(جاری ہے)

گلگت کے کچھ علاقوں میں بارش اور برفباری ہوئی۔

انتخابی نتائج آنے میں کچھ وقت لگے گا۔ پولنگ ایجنٹس  کے سامنے تمام نتائج تیار ہوں گے۔ غیر ذمہ درانہ اور غیر ضروری بیانات سے گریز کیا جائے۔ ابھی تک کسی بھی حلقے کا حتمی نتیجہ ابھی تک موصول نہیں ہوا۔ دور دراز علاقوں کے انتخابی نتائج میں وقت لگے گا۔ واضح رہے آج گلگت بلتستان کی قانون ساز اسمبلی کے 24 میں سے 23 انتخابی حلقوں میں پولنگ کا عمل مکمل ہوگیا ہے، اب تمام حلقوں کے پولنگ اسٹیشنز میں ووٹوں کی گنتی اورنتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے۔ گلگت بلتستان کے انتخابات میں حکمراں جماعت تحریک انصاف21، پیپلزپارٹی 23 اور مسلم لیگ ن کے21 امیدواروں سمیت الیکشن میں190آزاد امیدواروں نے بھی حصہ لیا، اسی طرح مسلم لیگ کے 14، جے یوآئی ف 11، اسلامی تحریک7 اور پی ایس پی کے4، ایم کیوایم 3، مجلس وحدت المسلمین 3 اور جماعت کے 2 امیدواروں نے انتخابات میں حصہ لیا۔ الیکشن میں 7 لاکھ 45 ہزار361 رجسٹرڈووٹرزنے حق رائے دہی استعمال کیا۔ان میں 4 لاکھ سے زائد مرد ووٹرز اور 3 لاکھ 35 ہزار سے زائد خواتین ووٹرز نے ووٹ کاسٹ کیا۔ ضلع دیامر 4، ضلع گانچھے 3، ضلع غذر3، ضلع گلگت3،ضلع ہنزہ، اسکردو میں انتخابی حلقوں میں عوام میں انتخابی امیدواروں کو ووٹ کاسٹ کیے۔