خبریں

تازہ ترین

جسٹس وقار احمد سیٹھ انتقال کرگئے

پشاور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس وقار احمد سیٹھ کرونا وائرس کے باعث انتقال کرگئے۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ کی طبیعت کچھ دنوں سے خراب تھی جس پر وہ اسلام آباد کے کلثوم انٹرنیشنل ہسپتال میں زیرعلاج تھے۔ آج اسپتال انتظامیہ نے ان کی موت کی تصدیق کردی۔

وقار احمد سیٹھ نے سابق ڈکٹیٹر پرویز مشرف کے خلاف غداری کے مقدمے میں ان کو سزائے موت سنائی تھی۔ اس کے بعد ان کی سپریم کورٹ میں تقرری رک گئی جس پر انہوں نے دو مرتبہ سپریم کورٹ سے رجوع کیا مگر شنوائی نہ ہوسکی۔ آخری مرتبہ گزشتہ روز ان کے وکیل نے عدالت عظمیٰ میں درخواست دائر کی تھی۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ16  مارچ 1961 کو ڈیرہ اسماعیل خان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے ابتدائی تعلیم کینٹونٹ پبلک اسکول پشاور سے حاصل کی۔ انہوں نے 1977 میں ایف جی انٹر کالج فار بوائز سے ہائیر سیکنڈری اسکول کا سند حاصل کیا اور 1981 میں اسلامیہ کالج پشاور سے بیچلر آف سائنس کی ڈگری حاصل کی۔ بعد ازاں 1985 میں خیبر لاء کالج پشاور سے ایل ایل بی اور 1986 میں یونیورسٹی آف پشاور سے ایم اے پولیٹیکل سائنس کیا۔

متعلقہ خبریں