خبریں

تازہ ترین

وفاقی وزیراطلاعات نے پی ٹی وی کی نجکاری کی تردید کردی

نجکاری کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے پاکستان ٹیلی ویژن نیٹ ورک ( پی ٹی وی) کی نجکاری سے متعلق خبروں کی تردید کردی ہے۔

سما سے گفتگو میں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ سرکاری ٹی وی چینل کی نجکاری کا کوئی فیصلہ نہیں ہوا ہے۔ ہم پی ٹی وی کو اپنے پاؤں پر کھڑا کر رہے ہیں۔ ہم نے پی ٹی وی کو ٹھیک کرنا ضرور شروع کردیا ہے، تاہم نجکاری کے حوالے سے نہ کوئی ایسا پلان موجود ہے اور نہ ایسا سوچا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ پی ٹی وی کو ری اسٹرکچر کيا جا رہا ہے۔ سرکاری ٹی وی کے انتظامی ڈھانچے پر کام کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل میڈیا پر منظر عام آنے والی اطلاعات کے مطابق کابینہ کمیٹی برائے اسٹیٹ اونڈ انٹرپرائزز نے پی ٹی وی کی نجکاری کی منظوری دیدی ہے۔

سامنے آنے والی اطلاعات میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ نجکاری کمیشن نے پاکستان ٹیلی ویژن (پی ٹی وی) کی نجکاری کیلئے مالیاتی امور اور انتظامی معاملات کی تفصیلات طلب کی ہیں، جس کی حتمی منظوری وفاقی کابینہ دے گی۔

قبل ازیں سرکاری اداروں کی نجکاری کے پروگرام میں ابتدائی طور پر 18 اداروں کو شامل کیا گیا تھا، تاہم اب اس میں پی ٹی وی سمیت دیگر کچھ اور اداروں کو بھی شامل کیا جارہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان ٹیلی ویژن کی نجکاری پلاننگ کمیشن آرڈیننس 2000ء کے تحت کی جائے گی۔

متعلقہ خبریں