خبریں

تازہ ترین

گورنر سندھ عمران اسماعیل سے پاکستان فارماسوٹیکل مینو فیکچررزایسوسی ایشن کے وفد کی ملاقات

کراچی۔2نومبر  (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 02 نومبر2020ء) :گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ پاکستان فارما سوٹیکل انڈسٹری کی ترقی کے بے شمار مواقع موجود ہیں ، پاکستان میں تیار کردہ ادویات کی برآمدات کے لئے عالمی مارکیٹ میں گنجائش موجود ہیں کیونکہ ملکی طور پر تیار ہونے والی ادویات اعلی معیار کی حامل ہیں ۔پیر کو جاری اعلامیہ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان فارما سوٹیکل مینو فیکچر رز ایسوسی ایشن کے 10 رکنی وفد سے گورنرہاس میں ملاقات کے دوران  گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔ وفد کی قیادت معروف صنعت کار زاہد سعید کررہے تھے۔ وفد کے اراکین میں قیصر وحید، توقیر الحق ،ڈاکٹر مہوش خان ، نجیب الرحمان ، صبور احمد ، اسداللہ ، جلال الدین ظفر ، نوید حکیم اور تیمور احمد شامل تھے ۔

(جاری ہے)

ملاقات میں فار ما سوٹیکل انڈسٹری کے

فروغ اس ضمن میں حکمت عملی، ادویات کی برآمدات میں اضافہ ، وفاقی حکومت کی مدد اور درکار اقدامات پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا ۔ گورنرسندھ نے کہا کہ کورونا وائرس کے دوران ڈاکٹروں و طبی عملہ کو حفاظتی سازوسامان کی

فراہمی پر ایسوی ایشن مبارکباد کی مستحق ہے جبکہ ایسوسی ایشن کی جانب سے فیلڈ آئسولیشن سینٹرز کو ادویات اور حفاظتی سازروسامان کی مسلسل فراہمی لائق تحسین ہے ۔انہوں نے ایسوسی ایشن کی جانب سے توجہ دلانے پر فار ما

سوٹیکل ایکسپورٹ کو نسل کو فعال کرنے کے لئے متعلقہ حکام سے بات کرنے کی یقین دہانی کرائی تا کہ ملکی ادویات کی برآمدات کے عمل کو بروقت بناکر برآمدکنندگان کو درکار سہولیات کی فراہم کی جا سکیں ۔ گورنرسندھ نے کہاکہ
صنعت کار وں کو ایکٹیو فارما سوٹیکل انگر یڈیئنٹس کی مقامی طور پر تیاری کی جانب توجہ دینا چاہئے تاکہ ادویات سازی کی صنعت کو خام مال کی مقامی طور پر ارزاں نرخوں پر دستیابی ہو سکے ،اس سے ادویات کی تیاری کی لاگت
میں نمایاں کمی ہوگی جس کا فائدہ مریضوں کوبھی ہوگا ۔ انہوں نے ایسوسی ایشن سے کہا کہ وہ انہیں اس ضمن میں تجاویز دیں تاکہ ان کی روشنی میں اسٹیٹ بینک اور دیگر بینکوں سے بات کی جا سکے ۔ گورنرسندھ نے کہا کہ وہ

فارما انڈسٹری سے جمع کئے جانے والے سینٹرل ریسرچ فنڈ کے موثر استعمال کے لئے بھی متعلقہ حکام سے بات کریں گے ۔ عمران اسماعیل نے کہا کہ فارما انڈسٹری پاکستانی معیشت کی ترقی میں مزید اہم کردار ادا کرسکتی ہے کیونکہ

اس کی برآمدات سے ملک کو خطیر زرمبادلہ حاصل ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت فیصل سلطان سے بھی فارما انڈسٹری کے نمائندوں کی جلد ملاقات کروائی جائے گی تاکہ وہ اپنے مسائل اور ان کے
ممکنہ حل کے ضمن میں ان سے بات چیت کرسکیں ۔ وفد کے اراکین زاہد سعید اور سابق چیئر مین پی پی ایم قیصروحید نے فارما انڈسٹری کے مسائل وزیراعظم کے علم میں لانے اور متعلقہ حکام سے بات کرنے کی یقینی دہانی پر ان کا شکریہ
ادا کرتے ہوئے کہا کہ گورنرسندھ کی ذاتی دلچسپی کے باعث فارما انڈسٹری کورونا بحران سے دیگر شعبوں کی طرح متاثر نہیں ہوئی