October 27, 2020

News PK

Latest Updates

عبدالواحد سمیت پانچ کھلاڑیوں کو سیکنڈ الیون نیشنل ٹی ٹونٹی کپ میں عمدہ کارکردگی کا صلہ مل گیا … نیشنل ٹی ٹونٹی کپ فرسٹ الیون ٹورنامنٹ میں مشکلات کا شکار سدرن پنجاب، سنٹرل … مزید

ملتان (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 اکتوبر2020ء) نیشنل ٹی ٹونٹی کپ فرسٹ الیون ٹورنامنٹ میں مشکلات کا شکار سدرن پنجاب، سنٹرل پنجاب اور بلوچستان نیاپنے اپنے اسکواڈ میں تبدیلیوں کا فیصلہ کیا ہے۔ ملتان میں کھیلے گئے نیشنل ٹی ٹونٹی کپ کے پہلے مرحلے کے اختتام پر پوائنٹس ٹیبل پرسرفہرست دو نوں ٹیموں، ناردرن اور خیبر پختونخوا سمیت سندھ نے اپنے اسکواڈ میں کوئی تبدیلی نہ کرنے کا اعلان کیا ہے۔
تین کرکٹ ایسوسی ایشنز کے ہیڈ کوچز عبدالرحمٰن، شاہد انور اور فیصل اقبال نے ایونٹ کے دوسرے مرحلیمیں نئی حکمت عملی اپنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان ہیڈ کوچز نے عبدالواحدبنگلزئی اور محمد اخلاق سمیت سیکنڈ الیون اسکواڈز میں شامل پانچ کھلاڑیوں کوان کی عمدہ کارکردگی کا صلہ دیتے ہوئے فرسٹ الیون کا حصہ بنالیا ہے۔

(جاری ہے)

اس فہرست میں سب سے پہلا نام کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے 17 سالہ نوجوان بیٹسمین عبدالواحد بنگلزئی کا ہے، جنہیں نیشنل ٹی ٹونٹی کپ سیکنڈ الیون ٹورنامنٹ کے 5 میچوں میں47 کی اوسط سے 235 رنز بنانے پر بلوچستان کے فرسٹ الیون اسکواڈ میں شامل کرلیا گیا ہے۔

ایونٹ میں دو نصف سنچریاں بنانے والے عبدالواحد بنگلزئی کو عمران فرحت کی جگہ اسکواڈ میں شامل کیا گیا ہے۔ بائیں ہاتھ کے بلے باز نے بلوچستان فرسٹ الیون کی نمائندگی کرتے ہوئے 2 میچوں میں 19 رنز بنائے تھے۔
نیشنل ٹی ٹونٹی کپ فرسٹ الیون ٹورنامنٹ کے پہلے مرحلے میں جیت کی راہ تکتی سدرن پنجاب کی ٹیم نے بھی اپنے اسکواڈ میں تین تبدیلیاں کی ہیں۔ بلاول بھٹی، محمد عرفان اور راحت علی کی جگہ دلبر حسین، محمد عمران اور زین عباس کو اسکواڈ میں شامل کرلیا ہے۔
نیشنل ٹی ٹونٹی کپ سیکنڈ الیون میں سدرن پنجاب کی نمائندگی کرتے ہوئے فاسٹ باؤلر محمد عمران نے 7 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ 6 وکٹیں حاصل کیں،دلبر حسین نے 7.2 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ5 وکٹیں اپنے نام کیں جبکہ زین عباس 193 رنز بناکر سدرن پنجاب سیکنڈ الیون کرکٹ ٹیم کے سب سے کامیاب بلے باز ہیں۔
دوسری طرف بلاول بھٹی ملتان میں کھیلے گئے ٹورنامنٹ کے پہلے مرحلیمیں ایک وکٹ بھی حاصل نہیں کرسکے تھے جبکہ محمد عرفان اور راحت علی نے بالترتیب 8.8 اور 10 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ تین، تین وکٹیں حاصل کیں۔
سنٹرل پنجاب کے ہیڈ کوچ نے بھی فرسٹ الیون اسکواڈ میں ایک تبدیلی کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے آف اسپنر بلال آصف کی جگہ سیکنڈ الیون کیٹاپ آرڈر بیٹسمین محمد اخلاق کو فرسٹ الیون اسکواڈ میں شامل کرلیا ہے۔ 2 میچوں میں ایک وکٹ حاصل کرنے والے بلال آصف کے برعکس محمد اخلاق نے قذافی اسٹیڈیم لاہور میں جاری سیکنڈ الیون کے ابتدائی 4 میچوں میں 3نصف سنچریوں کی مدد سے176 رنز بنائے۔
اسکواڈز:
بلوچستان:
حارث سہیل (کپتان)، بسم اللہ خان (نائب کپتان، وکٹ کیپر)، عبدالواحد بنگلزئی، اکبر الرحمٰن، عاکف جاوید، عماد بٹ، اویس ضیاء، امام الحق، عمران بٹ، کاشف بھٹی، خرم شہزاد، تیمور خان، عمید آصف، عمر گل، اسامہ میر اور یاسر شاہ۔
سنٹرل پنجاب:
بابراعظم (کپتان)، سعد نسیم(نائب کپتان)، کامران اکمل (وکٹ کیپر)، عبداللہ شفیق، عابد علی، احمد بشیر، علی شان، احسان عادل، عرفان خان نیازی، نسیم شاہ، ظفر گوہر، عثمان قادر، رضوان حسین، قاسم اکرم، محمد اخلاق ا ورصہیب اللہ۔
خیبرپختونخوا:
محمد رضوان (کپتان، وکٹ کیپر)، جنید خان (نائب کپتان) ، ارشد اقبال، آصف آفریدی، فخر زمان، افتخار احمد، عمران خان سینئر، محمد حفیظ، محمد حارث، محمد محسن، صاحبزادہ فرحان، شاہین شاہ آفریدی، شعیب ملک، عثمان خان شنواری، وہاب ریاض اور ذوہیب خان۔
ناردرن:
عماد وسیم (کپتان)، شاداب خان (نائب کپتان)، علی عمران، آصف علی، فرزان راجہ، حیدر علی، حماد اعظم، حارث روف، محمد عامر، محمد نواز، موسیٰ خان، روحیل نذیر (وکٹ کیپر)، سہیل اختر، سہیل تنویر، عمر امین اور ذیشان ملک۔
سندھ:
سرفراز احمد (کپتان، وکٹ کیپر)، سعود شکیل(نائب کپتان)، احسان علی، انور علی، اسد شفیق، میر حمزہ، اعظم خان، دانش عزیز، غلام مدثر، حسان خان، خر م منظور، شرجیل خان، محمد اصغر، محمد حسنین، محمد طحہٰ اور سہیل خان۔
سدرن پنجاب:
شان مسعود (کپتان)،حسین طلعت (نائب کپتان)،عامر یامین، علی شفیق، دلبر حسین، خوشدل شاہ، محمد عباس، محمد الیاس، محمد عمران، زین عباس، سیف بدر، صہیب مقصود، عمر خان، عمر صدیق، زاہد محمود اور ذیشان اشرف (وکٹ کیپر)۔