October 22, 2020

News PK

Latest Updates

مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پوری دنیا میں پاکستان کے موقف کو پذیرائی مل رہی ہے، بھارت کی سرزنش ہو رہی ہے، بھارتی جارحیت اور بیانات سے گھبرانے والے نہیں ہیں، بھارت نے فالس فلیگ … مزید

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین – اے پی پی۔ 26 ستمبر2020ء) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی امور ڈاکٹر معید یوسف نے کہا ہے کہ اس وقت مسئلہ کشمیر کے حوالے سے پوری دنیا میں پاکستان کے موقف کو پذیرائی مل رہی ہے اور بھارت کی سرزنش ہو رہی ہے، بھارتی جارحیت اور بیانات سے گھبرانے والے نہیں ہیں، بھارت نے فالس فلیگ آپریشن کی کوشش کی تو پاکستان اسے منہ توڑ جواب دیں گے۔ ہفتہ کو نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کو صوبہ بنانے کے حوالے سے ابھی حتمی فیصلہ نہیں ہوا، گلگت بلتستان میں ریفارمز پہلے سے ہو رہے ہیں، حکومت ہر فیصلہ مشاورت سے کر رہی ہے اور پاکستان جو بھی فیصلہ کرے گا وہ اقوام متحدہ فریم ورک کلاسیفکیشن قانون کے مطابق ہو گا۔

(جاری ہے)

معاون خصوصی نے کہا کہ انتظامی اور ترقی کے مقاصد کیلئے گلگت بلتستان کو صوبہ بنا سکتے ہیں اور وہاں کے لوگوں کی خواہش بھی یہی ہے، اس پر بحث جاری ہے اور تمام اسٹیک ہولڈرز کی مشاورت کے بعد حتمی فیصلہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی موثر سفارت کاری کی وجہ سے پوری دنیا مقبوضہ کشمیر کی حقیقت سے آگاہ ہو چکی ہے، بھارت کو نظر آ گیا ہے کہ اب بین الاقوامی سطح پر اس کا بیانیہ نہیں چل رہا اسلئے وہ اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے لیکن وہ کبھی بھی اپنے مذموم عزائم میں کامیاب نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان معاشی استحکام اور خطے میں امن کیلئے کوشاں ہے، بھارتی جارحیت خطے کے امن کیلئے خطرہ ہے اور اگر اس نے پاکستان کے خلاف فالس فلیگ آپریشن کی کوشش کی تو گزشتہ سال کی طرح اسے دوبارہ بھرپور جواب دیا جائے گا۔