October 24, 2020

News PK

Latest Updates

سندھ 17 کلومیٹر کا ایک علاقہ ہمیں دیدے تو صوبے میں گیس کی قلت ختم کردیں گے، وزیر توانائی

سندھ حکومت وہ علاقہ ہمیں نہیں دے رہی، عمر ایوب، وفاقی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے سندھ میں گیس کی قلت ہے، سندھ حکومت (فوٹو : فائل)

سندھ حکومت وہ علاقہ ہمیں نہیں دے رہی، عمر ایوب، وفاقی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے سندھ میں گیس کی قلت ہے، سندھ حکومت (فوٹو : فائل)

 کراچی: وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ سندھ میں 17 کلومیٹر کا ایک علاقہ ایسا ہے جو سندھ حکومت ہمیں دیدے تو صوبے بھر کا گیس کی قلت کا مسئلہ حل کردیں گے۔

وزیر توانائی عمر ایوب اور ندیم بابر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ حکومتوں نے تیل کی دریافت کے لیے کوئی اقدامات نہیں اٹھائے، ملک کے گیس کے ذخائر کی پیداوار میں ساڑھے 7 فیصد یومیہ کی بنیاد پر کمی آتی رہی، اب سندھ میں 250 ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی کمی آرہی ہے۔

سندھ حکومت 17 کلومیٹر کی ایک جگہ ہمیں نہیں دے رہی، عمر ایوب

عمر ایوب نے کہا کہ سندھ میں 17 کلومیٹر کی ایک جگہ ہے جو سندھ حکومت ہمیں نہیں دے رہی، اگر سندھ حکومت ہمیں وہ علاقہ دیدے تو ہم سندھ کو 250 ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کردیں گے۔

شہر کراچی میں گیس کا پریشر کم ہے، ندیم بابر

ندیم بابر نے کہا کہ سندھ کے شہر کراچی میں گیس کا پریشر کم ہے، گیس سیکٹر کا گردشی قرضہ 250 ارب روپے ہے، گزشتہ سال سوئی سدرن میں 1120 سے 1150 ملین کیوبک فٹ گیس سسٹم میں شامل ہورہی ہے، اس وقت سوئی سدرن میں 950 ملین کیوبک فٹ گیس سسٹم میں شامل ہورہی ہے تاہم سندھ کو 250 ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی کمی کا سامنا ہے۔

ندیم بابر نے کہا کہ کراچی کو 100 ملین ایم ایم سی ایف ڈی ایل این جی فراہم کی جارہی ہے، سردیوں میں سندھ کو 450 ایم ایم سی ایف ڈی گیس کی کمی کا سامنا ہوگا، اگر ہمیں سندھ حکومت کی جانب سے رائٹ آف وے مل جائے تو کمی پر قابو پایا جاسکتا ہے۔

وفاقی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے سندھ میں گیس کی قلت ہے، سندھ حکومت

دوسری جانب پریس کانفرنس پر ردعمل دیتے ہوئے سندھ حکومت کے ترجمان بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے سندھ میں گیس کی قلت ہے۔ ٹویٹر پیغام میں انہوں ںے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 158 کے تحت ضمانت دی گئی ہے کہ سندھ کو سندھ سے نکلنے والی گیس ملنی چاہیے سندھ کو ایل این جی / آر ایل این جی نہیں بلکہ سندھ میں نکلنے والی گیس فراہم کی جائے۔

انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کی بدانتظامی کی وجہ سے ہمارے گھریلو ، تجارتی اور صنعتی صارفین شدید مشکلات کا شکار ہیں، وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب گیس کی قلت کا ذمہ دار سندھ کو ٹھہرانے سے گریز کریں۔

آئین کے تحت اس وقت سب سے زیادہ گیس سندھ کو ملنی چاہیے، سعید غنی

دریں اثنا کراچی میں ایک تقریب کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سندھ کے وزیر تعلیم و محنت سعید غنی نے کہا ہے کہ کراچی میں گیس کی بڑی لوڈ شیڈنگ ہورہی ہے، گیس کی قلت بہت بڑے کرائسز پیدا کر رہی ہے، سندھ کے لوگوں کے ساتھ یہ ظلم ہورہا ہے، آئین پاکستان یہ کہتا ہے جو صوبہ گیس پیدا کرے گا اسے سب سے زیادہ گیس ملنی چاہیے۔